داخلہ فارم بھرنے سے پہلے اس کو ضرور پڑھیں:

  • شعبہ عربی وتجویدکاداخلہ صرف اخیر ذیقعدہ تک ہوگااس کےبعد کسی درجہ میں داخلہ نہیں ہوگا۔
  • عیدالاضحی کے بعد شعبہ حفظ ودینیات میں صرف باندہ واطراف باندہ کے طلبہ کاداخلہ کیاجاسکے گا۔
  • جدید طلبہ کیلئے کسی بھی شعبہ میں داخلہ کیلئے تعلیم واخلاق کاتصدیق نامہ ضروری ہے۔
  • تصدیق نامہ اسی ادارہ کاہوگاجس سے طالب علم پڑھ کرآیاہےاوراگرناظرہ خواں یا ابتدائی تعلیم ہےتوپھرادارہ یااس گاؤں کے کسی عالم کی بھی
  • تصدیق معتبرہوگی۔
  • داخلہ لینے والے ہرطالب علم کواپنا معتبر آئی ڈی(آدھارکارڈیاووٹرآئی ڈی )کی کاپی پیش کرنی ہوگی ، جوطالب علم چھوٹے ہوں اور ان کی آئی ڈی نہ بن سکی ہوتو اپنے والد کی آئی ڈی (جس میں اس کابھی نام درج ہو[راشن کارڈ وغیرہ])دینا لازم ہے۔
  • سرحدی صوبوں کے طلبہ کیلئے آدھارکارڈکےساتھ مقامی یعنی متعلقہ تھانہ کا تصدیق نامہ جس میں طالب علم کامکمل پتہ ہو دینا لازم ہوگا۔
  • کسی طالب علم کوسادہ موبائل کےعلاوہ کسی طرح کادوسراموبائل رکھنے کی اجازت نہیں ہوگی،بصورت دیگر موبائل کی ضبطی کےعلاوہ اخراج بھی کیاجاسکتا ہے۔

 

جامعہ عربیہ میں داخلہ کی تفصیلات

  • جامعہ کے تحت تعلیم اعدادیہ(ایک سال) ،شعبہ عربی(ہفت سال)،تخصص فی الادب(ایک سال) ،شعبہ ناظرہ’’پرائمری‘‘( پانچ سال)، روایت حفص (ایک سال)، شعبہ تدریب المعلمین(ایک سال)،حفظ پرمشتمل ہے۔
  • علوم عصریہ سے واقف طلبہ کے لئے عربی واسلامی تعلیم کاخصوصی نظم علٰیحدہ سے ہے،جس کے لئے درجات خصوصی کے نام سے پانچ سالہ نصاب کے ذریعہ عالم دین بننے کاموقع فراہم کیاجاتاہے۔
  • شعبہ ناظرہ میںدینی مضامین کے ساتھ عصری علوم(انگریزی،ہندی،حساب) بھی پڑھائے جاتے ہیں۔
  • شعبہ قراء ت میںحدر،ترتیل اورمشق نیزاس فن کے مناسب کتب کی تعلیم کے ساتھ ہندی،حساب اورانگریزی بھی پڑھائی جاتی ہے۔
  • اعدادیہ میںاردو،فارسی،عربی اورہندی ،حساب،انگریزی کی تعلیم دی جاتی ہے۔(یہ شعبہ جامعہ سے استفادہ کے خواہشمندان طلباء کے لئے ہوگاجو شعبۂ عربی یا تجوید میںتعلیم حاصل کرناچاہتے ہیںاوران کی اردواس معیارکی نہیںہوتی کہ ان شعبہ جات کی ابتدائی اردوکتب کاتحمل کر سکیں )۔
  • درجہ اول اوردوم میںتجوید،فقہ،نحو،صرف،منطق،فارسی کی ابتدائی تعلیم کے ساتھ بقدرضرورت عصری تعلیم کابھی نظم ہے۔
  • درجہ سوم،چہارم میںترجمہ قرآن،فقہ،نحوصرف،منطق،بلاغت،اورعربی ادب کی معیاری تعلیم ہوتی ہے۔
  • درجہ پنجم ،ششم میںتفسیر،اصول تفسیر،فقہ،اصول فقہ،بلاغت،عربی ادب، نیرعلم میراث کی تعلیم ہوتی ہے۔
  • دورہ حدیث شریف کے سال صحاح ستہ کے ساتھ بعض اہم کتب کی تعلیم کاخصوصی نظم ہے۔

 

قواعدوضوابط جامعہ جامعہ

  • شرعی وضع قطع کی پابندی ضروری ہے۔داڑھی کے حلق یاقصرکی قطعاًاجازت نہیںہے۔اسی طرح پینٹ شرٹ کے استعمال کی بالکل اجازت نہیںہے۔
  • بیڑی،سگریٹ پینا،گٹکھاکھانامنع ہے۔
  • آپس میںاتحاد واتفاق سے رہنالازم ہے۔کوئی طالب علم کسی سے خودانتقام نہیںلے سکتا،کوئی بات پیش آنے پراطلاع ناظم دارالاقامہ کودینی ہوگی وہ مناسب سزادے گا۔
  • جملہ اساتذہ کااحترام لازم ہے۔خواہ وہ کسی شعبہ سے تعلق رکھتے ہوںاورملازمین جامعہ کاخیال ورعایت بھی ضروری ہے۔
  • بغیراجازت ناظم دارالاقامہ کسی وقت بھی حدودجامعہ سے باہرجانامنع ہے۔
  • نمازباجماعت اداکرنالازم ہے۔
  • دارالاقامہ کے نظم میںدخل دینے کاکوئی حق نہیں۔
  • کسی طالب علم کوبغیراجازت ناظم دارالاقامہ خودسے کمرہ تبدیل کرنے کاکوئی حق نہیں ہوگا۔اورنہ کوئی کسی کوکمرہ سے باہر نکال سکتا ہے۔
  • صفائی ستھرائی اورپاکیزگی کاخیال رکھنالازم ہے۔
  • خلاف شرع کھیل کودکی قطعاًاجازت نہیںہے۔
  • ملٹی میڈیاموبائل،ریڈیو،ٹیب ریکارڈ،فحش لٹریچرس رکھنے کی قطعاً اجازت نہیں۔ کسی طالب علم کے پاس ملنے پرواپس نہیں دیاجائے گا۔
  • جامعہ میںتعلیم وتربیت کے علاوہ دیگرخارجی سرگرمیوںکی باکل اجازت نہیں ہے۔